ایم کیوایم کے ایک اورکارکن ندیم انصاری کو بدترین تشددکانشانہ بناکرماورائے عدالت قتل کردیاگیا

ایم کیوایم کے ایک اورکارکن ندیم انصاری کو بدترین تشددکانشانہ بناکرماورائے عدالت قتل کردیاگیا
ندیم انصاری کو17دسمبرکوقصبہ کالونی کے علاقے سے رینجرزنے گرفتارکیاتھاجس کے بعد ان کاکوئی پتہ نہیں تھا
رینجرز یاپولیس نے ندیم انصاری کوگرفتاری کے بعد کسی عدالت میں پیش نہیں کیا
ندیم انصاری کی تشددزدہ لاش اورنگی ٹاؤن کے علاقے میں پائی گئی ۔ اطلاع ملنے پرندیم انصاری کے بھائیوں نے لاش کی شناخت کی
ندیم انصاری کی عمر40سال تھی، وہ ایم کیوایم قصبہ علی گڑھ سیکٹریونٹ 130 کے کارکن تھے اورواٹربورڈ میں ملازمت کرتے تھے
ندیم انصاری کے ماورائے عدالت قتل کے واقعہ سے علاقے کے عوام میں شدیدغم وغصہ پایاجاتاہے

متحدہ قومی موومنٹ کے ایک اورکارکن ندیم انصاری کوگرفتاری کے بعد بدترین تشددکانشانہ بناکرماورائے عدالت قتل کردیاگیا۔ تفصیلات کے مطابق ندیم انصاری کو17دسمبر2016ء کوقصبہ کالونی کے علاقے سے رینجرزنے گرفتارکیاتھاجس کے بعد ان کاکوئی پتہ نہیں تھا، رینجرز یاپولیس نے ان کوکسی عدالت میں پیش نہیں کیاتھاان کے اہل خانہ ان کے لئے رینجرز کے علاقائی ہیڈکوارٹراورپولیس اسٹیشن کے چکر لگاتے رہے لیکن ندیم انصاری کے بارے میں کچھ نہیں بتایاگیاکہ انہیں کہاں رکھاگیاہے ۔ ندیم انصاری کی تشددزدہ لاش اورنگی ٹاؤن کے علاقے میں پائی گئی ۔ اہل خانہ کو اطلاع ملی توان کے بھائی ایک فلاحی ادارے کے مرکز پہنچے جہاں ان کے بھائیوں نے ندیم انصاری کی لاش کی شناخت کی۔ندیم انصاری کے جس پر بہیمانہ تشددکے نشانات تھے ۔ندیم انصاری کی عمر40سال تھی، وہ ایم کیوایم قصبہ علی گڑھ سیکٹریونٹ 130 کے کارکن تھے اورواٹربورڈ میں ملازمت کرتے تھے ۔ واضح رہے کہ اس سے قبل بھی اورنگی ٹاؤن اورقصبہ کالونی کے کئی کارکنوں کواسی طرح گرفتاری کے بعد سرکاری حراست میں تشددکانشانہ بناکرماورائے عدالت قتل کیاجاچکاہے لیکن کسی بھی ماورائے عدالت قتل کی کوئی تحقیقات نہیں کرائی گئی ۔ ندیم انصاری کے ماورائے عدالت قتل کے واقعہ سے علاقے کے عوام میں شدیدغم وغصہ پایاجاتاہے ۔