ایم کیو ایم شکاگو کے زیر اہتمام قائد تحریک الطاف حسین بھائی کی 64ویں سالگرہ شایان شان طریقے سے منائی گئی

ایم کیو ایم شکاگو کے زیر اہتمام قائد تحریک جناب الطاف حسین بھائی کی 64 ویں سالگرہ بھر پور جوش و جذبہ سے منائی گئی، 
 

اس سلسلے میں لنکنوڈ کمیونٹی ہال میں بڑے اجتماع کا انعقاد کیا گیا جس میں ایم کیو ایم امریکہ کی سینٹرل آرگنانگ کمیٹی کے جوائنٹ آرگنائزر شمیم صدیقی رکن سینٹرل آرگنائزنگ کمیٹی سہیل شمس، سابق ممبر سندھ اسمبلی اور رکن سینٹرل آرگنائزنگ کمیٹی سہیل یوسف انچارج شعبہ خواتین ایم کیو ایم یو ایس اے تحریم شاہد, سینٹ لوئس چیپٹر انچارج جواد درانی, انچارج شکاگو چیپٹر عقیل جمالی, انچارج شعبہ خواتین شکاگو سمیعہ خان, اراکین شکاگو چیپٹر کمیٹی، پاکستان کلب، کراچی کلب، گہوارہ ادب سمیت کارکنان، ہمدردان اور مہاجر عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی، تقریب کا باقاعدہ آغاز سید ایان کی روح پرور تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا اس کے بعد ارج عسکری اور آنسہ فائزہ نے ہدیہ نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وسلم پیش کیا، پروگرام کی نظامت کے فرائض نادیہ قریشی  اور سید عثمان نے انجام دیۓ۔  جس کے بعد شکاگو چیپٹر انچارج  عقیل جمالی اور شکاگو شعبہ خواتین کی انچارج سمیعہ خان نے تمام مہمانوں کو خوش آمدید کہا اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سہیل شمس نے موجودہ حالات پر سیر حاصل روشنی ڈالی اور  قائد تحریک سے وفا میں ہی قوم ہی بقا کے تصور کو اجاگر کیا، تحریم شاہد نے قائد تحریک سے عقیدت کا اظہار کرتے ہوۓ آزادی مہاجر ریاست کا مطالبہ کیا، سہیل یوسف زئ بھائ نے افواج پاکستان کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوۓ مہاجر اکثریتی علاقوں میں ہونے والے مظالم پر متنبہ کیا اور کہاکہ اب ظلم حد سے بڑھ گیا ہے اور ساتھ انٹرنیشنل کمیونٹی کی توجہ مہاجر قوم پر ہونے والے مظالم کی جانب مبذول کرائ اور مدد کی اپیل کی۔ 

ایم کیو ایم شکاگو یوتھ ونگ کی جانب سے میں حسب روایت بچوں نے ایک ٹیبلو پیش کیاجس میں مولانا ابو الکلام آزاد، قائد اعظم محمد علی جناح اور قائد تحریک الطاف حسین بھائی کے درمیان ایک خیالی مکالمہ بھی ٹیبلو کی طرز پر پیش کیا گیا۔ اسکے علاوہ کیک کاٹا گیا اور ہال میں موجود تمام لوگوں نے قائد تحریک سے اپنے تجدید عہد وفا کااظہار کیا۔ یہ پروگرام "ایم کیو ایم شکاگو چیپٹر" فیس بک پیج پر لائیو چلایا گیا جس پر ہزاروں ناظرین نے لائکس اور کمنٹس کیے۔ آخر میں قائد تحریک کی درازی عمر، شہداء، اسیران اور لاپتہ کارکنان اور تحریک کی کامیابی کے لۓ دعا کی گئ۔