جب تک کاروکاری، ونی،غیرت کے نام پر قتل اور دیگرفرسودہ رسومات کاخاتمہ نہیں کیاجاتاپاکستان میں خواتین کی غلامی کادورختم نہیں ہوسکتا۔الطاف حسین 08 Mar 2017

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے کہاہے کہ جب تک پاکستان سے کاروکاری، ونی،غیرت کے نام پر قتل اور دیگرفرسودہ رسومات کاخاتمہ نہیں کیاجاتاپاکستان میں خواتین کی غلامی کادورختم نہیں ہوسکتا۔ خواتین کے عالمی دن کے موقع پر اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ اکیسویں صدی کے اس ترقی یافتہ دورمیں اگرچہ شہروں میں رہنے والی خواتین توپھربھی تعلیم ،روزگاراورمختلف شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کوبروئے کارلاکربتدریج ترقی کے میدان میں آگے آرہی ہیں لیکن حقیقت یہ ہے کہ پاکستان میں قبائلی اورجاگیردارانہ نظام کی وجہ سے آج بھی دیہی علاقوں کی خواتین کو کاروکاری، ونی،غیرت کے نام پر قتل اور دیگرفرسودہ رسومات وروایات کی زنجیروں نے جکڑا ہواہے اوروہ اس جدیدترقی یافتہ دورمیں بھی غلاموں جیسی زندگی گزاررہی ہیں جو پاکستان کے ماتھے پر بدنماداغ ہے ۔انہوں نے کہاکہ جب تک کاروکاری، ونی،غیرت کے نام پر قتل اور دیگرفرسودہ رسومات کاخاتمہ نہیں کیاجاتاپاکستان میں خواتین کی غلامی کادورختم نہیں ہوسکتا۔جناب الطا ف حسین نے کہاکہ ضرورت اس بات کی ہے کہ خواتین کے خلاف امتیاز اور فرسودہ رسوم وروایات کے خاتمہ کیلئے قوانین بنائے جائیں اوران پر ان کی روح کے مطابق عمل کیا جائے ، اس کے ساتھ ساتھ تعلیم ، روزگاراورزندگی کے ہر شعبہ میں خواتین کومردوں کے مساوی حقوق دیئے جائیں ، اس صورت میں ہی ہم خواتین کاعالمی دن منانے کے صحیح حقدارہوں گے۔